“محبت بد دعا نہیں دیتی

 اس کی نظر سامنے اٹھی اور پھر پلٹنا بھول گئی .دل جیسے زور سے دھڑکا اور پھر خاموش ہوگیا.وہ زارا حیدر ہی تھی.اس کی پہلی محبت . جس کے ساتھ اس نے جینے مرنے کی قسمیں کھائی تھیں.اس نے کن اکھیوں سے دور بیٹھی اپنی بیوی کو دیکھا۔ وہ کسی سے باتوں میں مصروف تھی.

وہ آٹھ سال بعد اپنے آبائی شہر لوٹا تھا.سرکاری ملازمت میں شہر در شہر گھومنا اس کی مجبوری بن گئی تھی. مگر اپنے شہر میں واپسی اس کے لیے ایک خوشگوار احساس تھا . اس وقت وہ اپنے بچپن کے دوست کی شادی کی تقریب میں شریک تھا. وہ اپنی جگہ سے اٹھا اور زارا کے سامنے جا کر کھڑا ہو گیا . چند لمحوں کے لیے زارا جیسے پتھر کی ہو گئی ، مگر جلد ہی وہ اپنی اس کیفیت پر قابو پاگئی ، اور انہی چند لمحوں میں جیسے صدیاں گزر گئیں

 کیسی ہو؟ اس نے بات کرنے میں پہل کی . زارا نے نظریں اٹھا کے اسے دیکھا. اور اسے لگا کہ وہ اب کبھی نظریں نہیں اٹھا پائے گا ۔ ان دونوں کی خاموشی کے بیچ جیسے پرانا وقت چپکے سے لوٹ آیا. وہ دن جب زارا اس کی زندگی میں بہار کی طرح داخل ہوئی تھی . وہ اس کی بہن ثمن کی کلاس فیلو تھی ۔ وہ کسی دیوانی کی طرح اسکی محبت میں مبتلا ہوگئی تھی .اور وہ بھی صرف اس کے ساتھ زندگی گزارنے کے وعدے کرتا تھا مگر اس کے تمام وعدے ریت پر لکھی تحریر ثابت ہوئے. والدین کے مجبور کرنے پر اس نے اپنی کزن سے شادی کر لی ۔ اور زارا کسی حرفِ غلط کی طرح اس کی زندگی سے مٹ گئی . وہ زارا کو بھول کر اپنی زندگی میں مگن ہو گیا ۔ مگر آج اس طرح ، سرِ راہ ملاقات . وہ دونوں ہی چپ کھڑے تھے

پھپھو چلیں نا ..امی بلا رہی ہیں ۔ ایک لڑکی زارا کا بازو پکڑے کہہ رہی تھی . اس نے چونک کر زارا کی طرف دیکھا .

تم نے شادی نہیں کی ؟ زارا کے لبوں پر ایک لمحے کے لیے استہزائیہ مسکراہٹ ابھری

. “تم مردوں کی زندگی میں چار کی گنجائش ہمیشہ رہتی ہے ، مگر عورت کی زندگی میں صرف ایک مرد آتا ہے اور اس کے بعد کسی کی گنجائش نہیں رہتی … نہ دل میں … نہ زندگی میں .۔۔۔ یہ بات ہمیشہ یاد رکھنا عباد حسن … اس کی آنکھوں کی سطح گیلی ہونے لگی ۔ زارا نے جیسے ہی قدم آگے بڑھائے، اس نے بے اختیار کہا

“پلیز زارا مجھے کوئی بد دعا مت دینا …” زارا نے پیچھے مڑے بغیر کہا .. “محبت کبھی بد دعا نہیں دیتی ” وہ اپنی جگہ پتھر کا ہو گیا ۔ اس کی نظروں کے سامنے اپنے گھر کا ویران آنگن گھوم گیا جو شادی کے آٹھ سالوں کے بعد بھی بچے کی کلکاریوں سے محروم تھا .

“محبت بد دعا نہیں دیتی مگر ….. محبت میں بد دیانتی کرنے والوں کو کبھی معاف بھی نہیں کرتی .

تبصرہ کریں

Loading Facebook Comments ...

تبصرہ کریں