ترک پارلیمنٹ نے ہنگامی حالت میں 90 روز کی توسیع کردی

ترکی میں پارلیمنٹ نے منگل کے روز ملک میں جاری ہنگامی حالت میں مزید 90 روز کی توسیع کی منظوری دے دی۔ یہ فیصلہ استنبول میں ہفتے کی شب نائٹ کلب پر ہونے والے خونی حملے کے بعد سامنے آیا ہے۔واضح رہے کہ 15 جولائی کو ناکام فوجی انقلاب کے بعد ملک میں ہنگامی حالت نافذ کر دی گئی تھی۔

پارلیمنٹ پہلے ہی ایک مرتبہ ہنگامی حالت میں توسیع کر چکی ہے جس کی مدت 17 جنوری کو ختم ہو رہی ہے۔

عوام کے حرکت میں آ کر مذکورہ انقلاب کو ناکام بنا دینے کے بعد ترک حکومت مختلف محکموں میں فوجی انقلاب میں شریک اور اس کے حامی عناصر کا تعاقب کر رہی ہے تاکہ حالات کو کنٹرول میں لیا جا سکے۔

یورپی ممالک جمہوری نظام کو برقرار اور مستحکم رکھنے کی کوشش پر انقرہ کو تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں۔

ترکی کو داعش تنظیم اور مسلح کرد جماعتوں کی جانب سے پے درپے دہشت گرد حملوں کا سامنا ہے۔

ہفتے کے روز سال نو کی رات استنبول کے ایک نائٹ کلب پر مسلح حملے کے نتیجے میں 39 افراد اپنی جاںوں سے ہاتھ دھو بیٹھے تھے۔

تبصرہ کریں

Loading Facebook Comments ...

تبصرہ کریں